Delegation of the European Union to Pakistan

Joint Local Statement on the situation of International Non-Governmental Organisations

Islamabad, 13/12/2018 - 13:29, UNIQUE ID: 181213_11
Joint Statements

The European Union Delegation, the Heads of Mission of the European Union Member States represented in Pakistan[1], and the Heads of Mission of Australia, Canada, Japan, Norway and Switzerland strongly believe that a vibrant civil society is indispensable for good governance and inclusive development, issues that Prime Minister Imran Khan's Government promotes and which are at the heart of the Sustainable Development Goals. 

We have been engaging with the leadership of Pakistan to revisit the situation of those international non-governmental organisations (INGOs) whose registration was initially rejected by the previous administration. We welcome the recent offer for an open dialogue as proposed by the Government of Pakistan, and hope that this dialogue will be initiated shortly. 

We fully respect the Government’s right to maintain an INGO registration policy but we share a deep concern over the way in which it has been implemented, the potential for more INGOs to be closed without clear justification, the impact on Pakistan’s civil society, and the implications for Pakistan in achieving good governance and inclusive development. 

Earlier this month the deadline given by the Government of Pakistan to the 18 reputable and well-known INGOs to wind up their operations expired, leaving them with no other option but to terminate their operations and to re-apply in 6 months' time. This means that financial support to Pakistani organisations will be reduced as most INGOs work through local institutions to carry out their activities.

We believe that the work of INGOs contributes in reaching the Sustainable Development Goals in Pakistan. We are of the view that the rejected INGOs have been positively contributing towards these goals in many areas. With their expertise, flexibility, and ability to operate under difficult circumstances, international and national NGOs have made invaluable contributions to Pakistan and are indispensable for our countries to continue our wide-ranging cooperation activities in partnership with the Government of Pakistan.

We urge that, in the interest of the population of Pakistan, not least its most vulnerable citizens, a solution be found as soon as possible to avoid the closing down of further INGOs' activities.

Islamabad, 13 December 2018

[1] Austria, Belgium, Bulgaria, Czech Republic, Denmark, France, Germany, Greece, Hungary, Italy, the Netherlands, Poland, Portugal, Romania, Spain, Sweden, United Kingdom

 

بین الاقوامی این جی اوز کی صورتِحال پر مشترکہ مقامی بیان

یورپی یونین ڈیلیگیشن، پاکستان1 میں نمائندگی رکھنے والی یورپی یونین کی ممبر ریاستوں کے سربراہان، اور آسٹریلیا، کینیڈا، جاپان، ناروے اور سوئزرلینڈ کے مشن کے سربراہان اس بات پر پختہ یقین رکھتے ہیں کہ گُڈ گورننس اور مشمولی ترقی کے لئے ایک متحرک سول سوسائٹی کی موجودگی ناگزیر ہے۔ وزیرِ اعظم عمران خان کی حکومت بھی ان معاملات کو فروغ دیتی ہے اور یہ سسٹینیبل ڈیویلپمنٹ گولز میں بھی مرکزی حیثیت رکھتے ہیں۔

ہم پاکستانی قیادت کے ساتھ اُن انٹرنیشنل این جی اوز (INGOs) کے معاملے پر بات چیت کرتے رہے ہیں جن کی رجسٹریشن کو سابقہ انتظامیہ نے ابتدائی طور پر منسوخ کر دیا تھا۔ ہم حکومتِ پاکستان کی طرف سے اس ضمن میں ڈائیلاگ کی حالیہ پیشکش کا خیر مقدم کرتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ اس ڈائیلاگ کا آغاز جلد کیا جائے گا۔

ہم INGOs کے لئے ایک رجسٹریشن پالیسی قائم رکھنے کے حکومتی استحقاق کا مکمل احترام کرتے ہیں لیکن اس کے اطلاق کے طریقہِ کار، واضح وجوہ کے بغیر مزید INGOs پر پابندی کے امکان، پاکستان کی سول سوسائٹی پر اس کے اثر، اور پاکستان میں گُڈ گورننس کے حصول اور مشمولی ترقی پر اس کے مضمرات کے بارے میں فکر مند ہیں۔

حکومتِ پاکستان کی طرف سے 18 مشہور اور نیک نام INGOs کواپنا کام ختم کرنے کے لئے دی جانے والی ڈیڈ لائن اس ماہ کی ابتدا میں اپنے اختتام کو پہنچی اور ان کے پاس اپنا کام روک دینے اور چھ ماہ کے بعد دوبارہ درخواست دینے کے علاوہ کوئی چارہ نہ رہا۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ پاکستانی اداروں کو ملنے والا معاشی سہارا بھی کم ہو جائے گا کیونکہ زیادہ ترINGOs اپنے فرائض کی انجام دہی مقامی اداروں کی مدد سے کرتی ہیں۔

ہم یہ یقین رکھتے ہیں کہ INGOs کی سرگرمیاں پاکستان میں سسٹینیبل ڈیویلپمنٹ گولز کی تکمیل میں مددگار ہیں۔ ہماری رائے کے مطابق رد کی جانے والی INGOs ان مقاصد کے لئے مثبت کردار ادا کر رہی تھیں۔ بین الاقوامی اور قومی این جی اوز اپنی مہارت، لچک اور مشکل حالات میں بھی کام کرنے کی صلاحیت کے ساتھ پاکستان کو بیش قیمت مدد فراہم کرتی رہی ہیں اور حکومتِ پاکستان کے ساتھ ہمارے ممالک کی وسیع متعاون کارروائیوں کے لئے ناگزیر ہیں۔

ہم یہ درخواست کرتے ہیں کہ پاکستانی عوام، بالخصوص کمزور ترین شہریوں کے مفادات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے جلد از جلد کوئی حل تلاش کیا جائے تاکہ مزید INGOs کی کارروائیوں پر پابندی نہ لگائی جائے۔

13 دسمبر 2018

 

1 آسٹریا، بیلجئیم، بلغاریہ، چیک ریپبلک، ڈنمارک، فرانس، جرمنی، یونان، ہنگری، اٹلی، نیدرلینڈز، پولینڈ، پرتگال، رومانیہ، سپین، سویڈن، برطانیہ

 

[1] Austria, Belgium, Bulgaria, Czech Republic, Denmark, France, Germany, Greece, Hungary, Italy, the Netherlands, Poland, Portugal, Romania, Spain, Sweden, United Kingdom

Editorial Sections: